Home / پاکستان / فضل الرحمن پریشان ہوگئے، عمران خان

فضل الرحمن پریشان ہوگئے، عمران خان

اسلام آباد …. وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمان دینی مدارس میں حکومت کی مجوزہ اصلاحات سے بہت پریشان ہیں۔ وزیراعظم اپنے ترجمانوں کے اجلاس کی صدارت کررہے تھے۔ انہوں نے اس موقع پر کہا کہ دینی مدارس میں اصلاحات کے بعد کوئی سیاسی جماعت یا شخصیت طلبہ کو سیاسی مقاصد کے لئے استعمال نہیں کرسکے گا۔

وزیراعظم نے کہا کہ فضل الرحمان اپنی ڈوبتی ہوئی سیاست کو بچانے کے لئے آزادی مارچ کے لئے نکلے ہیں۔ وہ 27اکتوبر کو اسلام آباد ضرور آئیں تاریخ تبدیل نہ کریں۔ انہوں نے کہا کہ فضل الرحمان کے سیاسی مقاصد اور سیاست اب عیاں ہونے چاہئیں۔ انہوں نے اپنے ترجمانوں کو کہا کہ وہ عوام کو بتائیں کہ اپوزیشن جماعتیں کرپشن کی دولت بچانے کے لئے سڑکوں پر نکلنے کی تیاری کررہی ہیں لیکن ہم انہیں نہیں روکیں گے۔دریں اثناءوزیر اعظم عمران خان نے کہاہے کہ پاکستان اسٹیل ملز کی بحالی حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل ہے، سالہا سال سے سرکاری خزانے پر بوجھ بننے والے ادارے کی بحالی کو ماضی کی حکومتوں کی جانب سے فراموش کیا جانا قوم پر ظلم کے مترادف ہے۔

جمعرات کو وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت پاکستان اسٹیل ملز کی بحالی کے حوالے سے اجلاس ہوا جس میں مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد، وزیر نجکاری میاں محمد سومرو، چیئرمین بورڈ آف ڈائریکٹرز پاکستان اسٹیل ملزعامر ممتاز و دیگر شریک ہوئے اجلاس میں پاکستان اسٹیل ملز کی بحالی کے سلسلے میں کی جانے والی کوششوں اور اس سلسلے میں مختلف آپشنز زیرغور آئے۔وزیرِ اعظم کو بتایا گیا کہ پاکستان اسٹیل ملز کی بحالی کے حوالے سے چین اور روس کی کمپنیوں کی جانب سے دلچسپی کا اظہار کیا گیا ہے۔ اس سلسلے میں مختلف تجاویز پر غور کیا جا رہا ہے۔

وزیرِ اعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان اسٹیل ملز کی بحالی حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل ہے۔ انہوں نے کہا کہ سالہا سال سے سرکاری خزانے پر بوجھ بننے والے اس ادارے کی بحالی کو ماضی کی حکومتوں کی جانب سے فراموش کیا جانا قوم پر ظلم کے مترادف ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی ہر ممکنہ کوشش ہے کہ پاکستان اسٹیل ملز کو بحال کرکے اسے منافع بخش ادارہ بنایا جائے تاکہ جہاں سرکاری خزانے پر ہر ماہ پڑنے والے بوجھ کو ختم کیا جا سکے وہاں ادارے کو فعال بنا یا جائے تاکہ وہ ملکی تعمیر و ترقی میں اپنا کردار ادا کر سکے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے