Home / تازہ ترین / مودی سرکار کا مقبوضہ کشمیر میں سب اچھا دکھانے کا منصوبہ ناکام

مودی سرکار کا مقبوضہ کشمیر میں سب اچھا دکھانے کا منصوبہ ناکام

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)یورپین اراکین پارلیمنٹ کا نجی دورہ مقبوضہ کشمیر،بھارتی سرکار کا جموں و کشمیر میں سب اچھا دکھانے کا منصوبہ ناکام ۔ تفصیلات کے مطابق بھارتی حکومت میٹرک کے امتحانات کا فائدہ اٹھاکر من پسند یورپین اراکین پارلیمنٹ کے ایک گروپ کو وادی میں سب نارمل دکھانا چاہتی تھی،سری نگر میں مقامی کشمیری آبادی سے ملنے کی خواہش پر برطانوی رکن یورپین پارلیمنٹ کرس ڈیوس کو دورہ کی دعوت منسوخ کردی گئی،یورپین پارلیمنٹ نے وضاحت کردی مقبوضہ کشمیر کا دورہ کرنے والے وفد کی کوئی سرکاری حیثیت نہیں، یورپین پارلیمنٹ کے بھارت نواز اراکین کے دورہ مقبوضہ کشمیر کے موقع پر پرتشدد مظاہرے کئے گئے ،پورا مقبوضہ کشمیر مظاہروں سے گونج اٹھا،سڑکوں پر ہو کا عالم، دکانیں بند رہیں، سری نگر شہر کے کونے کونے میں مظاہرے کئے گئے کشمیر میں معمولات زندگی گزشتہ 86روز سے معطل ہیں،پورا مقبوضہ جموں و کشمیر لاک ڈاؤن کا شکار ،کشمیر میں خوراک و ادویات کی شدید قلت پیدا ہوگئی ہے۔دوسری جانب سید عبداللہ گیلانی رہنما حریت کانفرنس نے بتایاکہ ایشین ہٹلر نرندر مودی نے اچانک یورپی پالیمٹیرینز کو مقبوضہ کشمیر کا دورہ کرانے کا اعلان کیا ہے ،ان ممبران کو ایک سازش کے تحت مخصوص علاقوں تک رسائی دی جائے گی ۔ انہوںنے کہاکہ یوپی یونین کے چند ممبران کا تعلق یورپ کی دائیں بازو جماعتوں سے ہے،بھارت نے پچھلے تیس سال سے انسانی حقوق کی تنظیموں کیلئے نو گو ایریا بنا رکھا ہے ۔بھارت اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کو کشمیر کا دورہ کرنے کی اجازت نہیں دے رہا۔انہوںنے کہاکہ بھارت انسانی حقوق کی پامالیوں کو چھپانا چاہتا ہے ،بھارتی حکومت نے اچانک دسویں اور بارہویں جماعتوں کے امتحانات کا اعلان کردیا ہے ،امتحانات کا اعلان بھی ایک منصوبہ بندسازش کا حصہ ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے