Home / پاکستان / کراچی میں غیر اعلانیہ طویل لوڈ شیڈنگ،عوام بپھر گئے، سڑکوں پر شدید احتجاج

کراچی میں غیر اعلانیہ طویل لوڈ شیڈنگ،عوام بپھر گئے، سڑکوں پر شدید احتجاج

کراچی(اسٹاف رپورٹر)شہرقائد میں شدید ترین گرمی کے باوجود بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ نے شہریوں کی زندگی اجیرن کردی،کراچی کے مختلف علاقوں میں رات گئے بھی بجلی کی غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری رہے،کے الیکٹرک کی جانب سے شہر کے مختلف علاقوں میں رات گئے بھی غیراعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے لیاقت آباد، نارتھ کراچی، فیڈرل بی ایریا بلاک 17، گلستان جوہر بلاک 8 میں رات گئے بجلی کی آنکھ مچولی جاری رہی۔لیاقت آباد سی ون ایریا میں 18 گھنٹے بعد بحال ہونے والی بجلی بھی رات پونے گیارہ بجے دوبارہ غائب ہوگئی، بجلی کی طویل بندش سے سخت گرمی کے موسم میں شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔فیڈرل بی ایریا کے کئی بلاکس میں رات 3 بجے سے بجلی غائب ہے جس کے سبب شہری اذیت میں مبتلا ہیں۔ پی ای سی ایچ ایس کے علاقے میں بجلی بھی کی کئی کئی گھنٹوں کی لوڈ شیڈنگ سے ستائے شہریوں نے کے الیکٹرک کے دفتر کے باہر احتجاج کیا اور دھرنا دیا۔

کراچی میں شاہراہ قائدین پر کے الیکٹرک کے دفتر کے باہر علاقہ مکینوں نے شدید احتجاج کیا۔ مظاہرین نے کے الیکٹرک کے دفتر میں داخل ہونے کی کوشش کی تاہم پولیس کی نفری موقع پر پہنچ گئی اور مشتعل افراد کو اندر جانے سے روک دیا۔مظاہرین نے شاہراہ قائدین پر دھرنا دے دیا جس کے نتیجے میں ٹریفک جام ہوگیا۔ علاقہ مکینوں نے ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈ اٹھائے ہوئے تھے اور وہ لوڈ شیڈنگ نہ منظور کے نعرے لگارہے تھے۔اسکے علاوہ نیو کراچی، لانڈھی، کورنگی، لیاقت آباد، گلشن حدید، گھگھر، پپری،ابراہیم حیدری، شاہ فیصل کالونی اور دیگر علاقوں میں کے الیکٹرک کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ اور ذائد بلنگ کے خلاف احتجاجی مظاہرے کیے گئے۔

قیامت خیز گرمی اور لاک ڈاؤن کے باوجود ملیر، کورنگی، لانڈھی، نیو کراچی میں بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ جاری ہے جس میں دن اور رات کے کئی گھنٹے بجلی بند کر کے عوام کی زندگی اجیرن بنادی ہے اس سلسلے میں ضلع ملیر کے مختلف علاقوں گلشن حدید، پپری، گھگھر،ابراہیم حیدری اور دیگر میں علاقہ مکینوں کی جانب سے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ شارع قائدین کے الیکٹرک آفس کے سامنے مکینوں کا لوڈشیڈنگ کے خلاف احتجاج۔ مظاہرین نے سڑک بلاک کرکہ ٹریفک معطل کردی، پولیس کی مظاہرین کو منتشر کرنے کی کوشش کے الیکٹرک انتظامیہ کے خلاف مظاہرین نے فلک شگاف نعرے لگائے۔ گلشن حدید مظاہرین نے بتایا کہ واحد علاقہ ہے جہاں کے الیکٹرک کو 100 فیصد بلنگ کی جاتی ہے جس کے باعث یہاں سے لوڈشیڈنگ ختم کردی گئی تھی لیکن اب بار بار کئی گھنٹے لوڈشیڈنگ کر کے عوام کو ذہنی اذیت میں مبتلا کر دیا ہے گھگھر، ابراہیم حیدری اور پپری کے مکینوں کا کہنا ہے یہاں کے الیکٹرک کا عملے نے اپنے مقامی دلال مقرر کر دیے ہیں جنہوں نے بھتہ وصولی کا کام شروع کردیا ہے اور طرح طرح سے لوگوں کو پریشان کرنے پر تلے ہیں اس کے باوجود بھی بجلی ہر دن میں دو گھنٹوں کے بعد غائب رہتی ہے انہوں نے کہا کہ کے الیکٹرک ایک ایسا بدمعاش ڈپارٹمنٹ ہے جو حکومت کی بات بھی نہیں سنتا انہوں نے وفاقی حکومت سے کے الیکٹرک انتظامیہ کے خلاف کاروائی کر کے بجلی بحالی کا مطالبہ کیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے