Home / پاکستان / کراچی میں بد ترین لوڈ شیڈنگ، شارٹ فال 800میگا واٹ تک پہنچ گیا

کراچی میں بد ترین لوڈ شیڈنگ، شارٹ فال 800میگا واٹ تک پہنچ گیا

کراچی (اسٹاف رپورٹر)کراچی کے مختلف علاقوں میں اعلانی اور غیر اعلانی لوڈشیڈنگ جاری ہے جبکہ شدید گرمی میں لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ اِس ضمن میں ذراءع کے الیکٹرک کا کہنا ہے کہ بجلی کا شارٹ فال 800 میگاواٹ تک ہے جبکہ کے الیکٹرک کے بن قاسم کے پاور پلانٹ بند پڑے ہیں ۔ ذراءع کے الیکٹرک نے بتایا کہ 300 میگا واٹ بجلی نجی پاور پلانٹس سے حاصل کی جا رہی ہے جبکہ نیشنل گرڈ سے 750 میگاواٹ تک بجلی حاصل کی جا رہی ہے ۔ ذراءع کے مطابق 800 میگاواٹ کا شارٹ فال شہر میں طویل لوڈشیڈنگ کرکے پورا کیا جارہا ہے ۔

دوسری جانب نارتھ کراچی، نیو کراچی، لیاقت آباد، لیاری کھارادر، کورنگی، بلدیہ، گلشن معمار، گڈاپ، اسکیم 33، احسن آباد، گلشن حدید، سرجانی ٹاون، غریب آباد اور موسی کالونی میں لوڈشیڈنگ جاری ہے ۔ لوڈ شیڈنگ سے مستثنیٰ علاقوں میں تین سے پانچ گھنٹے لوڈ شیڈنگ کی جارہی ہے جبکہ لوڈشیڈنگ والے علاقوں میں بجلی کی بندش کا دورانیہ 12 گھنٹے سے بھی تجاوز کرگیا ہے ۔

شہرکے مختلف علاقوں میں رات گئے شہرکے بیشترعلاقوں میں لوڈشیڈنگ کی گئی ، کے الیکٹرک کی نا اہلی کے باعث شہر کراچی کا بڑا حصہ بجلی سے محروم رہا،شہریوں نے شکوہ کیاکہ بار بار شکایات درج کرانے کے باوجود کے ای ہیلپ لائن پر کچھ نہیں بتایا جارہا، انہوں نے بتایاکہ مون سون بارشوں کو بھی لوڈشیڈنگ کا جواز بنالیا جاتا ہے، لوڈشیڈنگ کے باعث پانی کی فراہمی بھی متاثر ہوتی ہے، لوڈشیڈنگ کے باوجود بھاری بھر کم بل بھی فراہم کیے جارہے ہیں ۔

شہریوں نے کہاکہ ایک طرف کورونا وائرس کی وبا نے حالات مشکل بنا دیئے ہیں اور اوپر سے شدید گرمی میں ہونے والی لوڈشیڈنگ نے شہریوں کی زندگی اجیرن کردی ہے ۔ کراچی میں لوڈشیڈنگ کا مسئلہ نیا نہیں لیکن مستقبل قریب میں بھی یہ مسئلہ فی الحال حل ہوتا نظر نہیں ;200;رہا،حکومت کے بلند و بانگ دعوے پانی کے بلبلے ثابت ہورہے ہیں ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے