Home / پاکستان / ایم کیو ایم اور تحریک انصاف کے درمیان نئی مردم شماری پراتفاق

ایم کیو ایم اور تحریک انصاف کے درمیان نئی مردم شماری پراتفاق

کراچی(اسٹاف رپورٹر)ایم کیو ایم اور تحریک انصاف کے درمیان نئی مردم شماری پراتفاق ہوگیا ہے۔سفارشات مرتب کرنے کیلئے وفاقی وزیرامین الحق کی سربراہی میں کمیٹی تشکیل دے دی گئی ہے۔یہ فیصلہ جمعرات کودونوں جماعتوں کے رہنماؤں کے درمیان ہونے والی ملاقات میں کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق مردم شماری پر وفاقی حکومت سے ناراض ایم کیوایم پاکستان سے تحریک انصاف کی قیادت نے رابطے شروع کردیئے ہیں۔ اس حوالے سے پی ٹی آئی کے وفد نے ایم کیوایم کے عارضی مرکز بہادر آباد پر ایم کیو ایم رہنماؤں فیصل سبزواری، ڈپٹی کنوینئر کنور نوید جمیل، ایم پی اے حمید ظفر سے ملاقات کی۔ تحریک انصاف کے وفد میں فردوس شمیم نقوی، حلیم عادل شیخ، خرم شیرزمان اور سعید آفریدی شامل تھے اور یہ ملاقات پی ٹی آئی کی اعلی قیادت کی ہدایت پر کی گئی جس میں وزیراعظم عمران خان کا پیغام بھی ایم کیوایم قیادت کو پہنچایا گیا۔

بعدازاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فردوس شمیم نقوی نے کہا کہ4 سال بعد 2017 کی مردم شماری کا ازسرنو جائزہ لینا ممکن نہیں۔ نئی مردم شماری مسائل کا حل ہے۔ دونوں جماعتوں میں سندھ اسمبلی کی 3 نشستوں پر ضمنی انتخابات میں مشترکہ طور پر بھی تبادلہ خیال ہواہے۔انہوں نے کہا کہ نئی مردم شماری کیلئے پہلے ٹیسٹ مردم شماری ہونی چاہیے، پھر مردم شماری کا آغاز ہو۔ پہلے بھی کہا تھا سندھ میں پہلے شہری اور پھر دیہی علاقوں کی مردم شماری ہو۔انہوں نے کہا کہ امین الحق کی سربراہی میں کمیٹی بنادی گئی ہے جو آئندہ مردم شماری کیلئے سفارشات مرتب کرے گی۔انہوں نے کہا کہ وفاقی کابینہ نے مردم شماری کی منظوری دے کر کوئی غیرآئینی کا نہیں کیا، وزیر اعظم اور وفاقی کابینہ کی منظوری سے ہی کوئی بھی معاملہ مشترکہ مفادات کونسل میں جاتا ہے۔

ایم کیو ایم کے فیصل سبزواری نے کہا کہ تحریک انصاف کے رہنماؤں سے مردم شماری اور ضمنی انتخابات کے حوالے سے تبادلہ خیال ہوا ہے۔ایم کیو ایم کا موقف ہے کہ جب تک آبادی کا درست شمار نہیں ہوگاوسائل کی تقسیم منصفانہ نہیں ہوسکتی۔ہمارا مطالبہ ہے کہ اگر مردم شمار کا آڈٹ نہیں کراسکتے تو نئی مردم شماری کرائی جائے۔ پیپلز پارٹی کے سامنے بھی یہ مطالبہ رکھا ہے، آج تحریک انصاف نے بھی ہمارے موقف کی تائید کی ہے، ہمیں یقین دلایا گیا ہے کہ وزیر اعظم جلد معاملے پر پالیسی کا اعلان کریں گے۔
مردم شماری

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے